وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے اعلان کیا ہے کہ وائرس سے زیادہ متاثرہ اضلاع میں نویں سے 12ویں جماعت کے طلبہ کے لیے مرحلہ وار کلاسز کا انعقاد کیا جائے گا البتہ پہلی سے آٹھویں جماعت کیلئے سکولز بدستور بند رہیں گے۔

ٹوئٹر پر پیغامات میں شفقت محمود کا کہنا تھا کہ کلاسز بحالی کا فیصلہ بورڈ امتحانات کی تیاری کے لیے کیا گیا، نویں سے 12ویں جماعت کے امتحانات بورڈز کی اعلان کردہ نئی تاریخوں کے مطابق لیے جائیں گے۔

ساتھ ہی انہوں نے واضح کیا کہ مذکورہ بالا جماعتوں کے امتحانات مئی کے چوتھے ہفتے سے قبل شروع نہیں ہوں گے۔

انہوں نے بتایا کہ امتحانات کے نئے ٹائم ٹیبل کو مدِ نظر رکھتے ہوئے یونیورسٹیز کے داخلہ شیڈول کو بھی ایڈجسٹ کیا جائے گا۔

یہ تمام فیصلے تمام صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے وزرائے تعلیم اور صحت کے خصوصی اجلاس میں کیے گئے۔

وزیر تعلیم نے بتایا کہ اجلاس میں تمام وزرا کے اتفاق رائے سے اس بات کا بھی فیصلہ کیا گیا کہ اے، ایز، او اور آئی جی سی ایس ای امتحانات سی اے آئی ای ایس کے اعلان کردہ تاریخوں کے مطابق ہوں گے۔

علاوہ ازیں وبا سے زیادہ متاثرہ اضلاع میں موجود یونیورسٹیز کی آن لائن کلاسز جاری رہیں گی جبکہ مثبت کیسز کی 8 فیصد سے کم شرح والے علاقوں میں جامعات اپنے معمولات جاری رکھیں گی۔

ساتھ ہی وزرا کے اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ پہلی سے 8 ویں جماعت تک کے طلبہ کے لیے کلاسز بدستور بند رہیں گی جس کی تفصیلات صوبائی حکومت خود جاری کریں گی۔

خیال رہے کہ اس سے قبل صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخوا میں بورڈ امتحانات کے پیش نظر 19 اپریل سے نویں سے بارہویں جماعت کے لیے اسکول دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ وزیر تعلیم شفقت محمود نے کورونا وائرس کے پیش نظر 10 مارچ سے اسلام آباد سمیت ملک کے کچھ شہروں میں تعلیمی ادارے بند کرنے کا اعلان تھا اور وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخوا کے اکثر اضلاع میں اسکولوں کی بندش کو توسیع دے دی گئی تھی۔

About the author

Avatar

Voice of KP

Leave a Comment